خاتمہ بالایمان کی دعا

Pin it .

خاتمہ بالایمان کے لیے دعا درج ذیل ہے۔ صحیح بخاری کی حدیث ہے کہ جو مسلمان رات کو وضو کر کے یہ دعا پڑھ کر سوئے اور اگر اسی رات مرگیا تو وہ فطرت پر مرے گا یعنی اس کا خاتمہ بالایمان ہوگا۔

مسلمان کو یہ دعا کرنی چاہیے کہ اس کا خاتمہ بالایمان ھو یعنی وہ دین اسلام کی فطرت پر مرے۔ اگر اس کا خاتمہ بالایمان ھو تو آخرت کے دن اسے ذلت و رسوائی کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔

خاتمہ بالایمان کے لیے دعا

صحیح بخاری
حدیث نمبر: 247


حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مُقَاتِلٍ ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ أَخْبَرَنَا سُفْيَانُ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مَنْصُورٍ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سَعْدِ بْنِ عُبَيْدَةَ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْالْبَرَاءِ بْنِ عَازِبٍ ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ قَالَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ إِذَا أَتَيْتَ مَضْجَعَكَ فَتَوَضَّأْ وُضُوءَكَ لِلصَّلَاةِ، ‏‏‏‏‏‏ثُمَّ اضْطَجِعْ عَلَى شِقِّكَ الْأَيْمَنِ، ‏‏‏‏‏‏ثُمَّ قُلْ:‏‏‏‏ اللَّهُمَّ أَسْلَمْتُ وَجْهِي إِلَيْكَ، ‏‏‏‏‏‏وَفَوَّضْتُ أَمْرِي إِلَيْكَ، ‏‏‏‏‏‏وَأَلْجَأْتُ ظَهْرِي إِلَيْكَ رَغْبَةً وَرَهْبَةً إِلَيْكَ، ‏‏‏‏‏‏لَا مَلْجَأَ وَلَا مَنْجَا مِنْكَ إِلَّا إِلَيْكَ، ‏‏‏‏‏‏اللَّهُمَّ آمَنْتُ بِكِتَابِكَ الَّذِي أَنْزَلْتَ وَبِنَبِيِّكَ الَّذِي أَرْسَلْتَ، ‏‏‏‏‏‏فَإِنْ مُتَّ مِنْ لَيْلَتِكَ فَأَنْتَ عَلَى الْفِطْرَةِ، ‏‏‏‏‏‏وَاجْعَلْهُنَّ آخِرَ مَا تَتَكَلَّمُ بِهِ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ فَرَدَّدْتُهَا عَلَى النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، ‏‏‏‏‏‏فَلَمَّا بَلَغْتُ اللَّهُمَّ آمَنْتُ بِكِتَابِكَ الَّذِي أَنْزَلْتَ قُلْتُ:‏‏‏‏ وَرَسُولِكَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ لَا، ‏‏‏‏‏‏وَنَبِيِّكَ الَّذِي أَرْسَلْتَ.

ترجمہ:
ہم سے محمد بن مقاتل نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم کو عبداللہ نے خبر دی، انہوں نے کہا ہمیں سفیان نے منصور کے واسطے سے خبر دی، انہوں نے سعد بن عبیدہ سے، وہ براء بن عازب ؓ سے روایت کرتے ہیں، وہ کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا کہ جب تم اپنے بستر پر لیٹنے آؤ تو اس طرح وضو کرو جس طرح نماز کے لیے کرتے ہو۔ پھر داہنی کروٹ پر لیٹ کر یوں کہو اللهم أسلمت وجهي إليك،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وفوضت أمري إليك،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وألجأت ظهري إليك،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ رغبة ورهبة إليك،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ لا ملجأ ولا منجا منک إلا إليك،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ اللهم آمنت بکتابک الذي أنزلت،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وبنبيك الذي أرسلت– ‏ اے اللہ! میں نے اپنا چہرہ تیری طرف جھکا دیا۔ اپنا معاملہ تیرے ہی سپرد کردیا۔ میں نے تیرے ثواب کی توقع اور تیرے عذاب کے ڈر سے تجھے ہی پشت پناہ بنا لیا۔ تیرے سوا کہیں پناہ اور نجات کی جگہ نہیں۔ اے اللہ! جو کتاب تو نے نازل کی میں اس پر ایمان لایا۔ جو نبی تو نے بھیجا میں اس پر ایمان لایا۔ تو اگر اس حالت میں اسی رات مرگیا تو فطرت پر مرے گا اور اس دعا کو سب باتوں کے اخیر میں پڑھ۔ براء ؓ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ ﷺ کے سامنے اس دعا کو دوبارہ پڑھا۔ جب میں اللهم آمنت بکتابک الذي أنزلت پر پہنچا تو میں نے ورسولک‏ (کا لفظ) کہہ دیا۔ آپ ﷺ نے فرمایا نہیں (یوں کہو) ونبيك الذي أرسلت۔

Translation:
Narrated Al-Bara bin Azib (RA): The Prophet ﷺ said to me, “Whenever you go to bed perform ablution like that for the prayer, lie or your right side and say, “Allahumma aslamtu wajhi ilaika, wa fauwadtu amri ilaika, wa aljatu Zahri ilaika raghbatan wa rahbatan ilaika. La Malja wa la manja minka illa ilaika. Allahumma amantu bikitabika-l-ladhi anzalta wa bina-biyika-l ladhi arsalta” (O Allah! I surrender to you and entrust all my affairs to you and depend upon you for Your Blessings both with hope and fear of you. There is no fleeing from you, and there is no place of protection and safety except with You O Allah! I believe in Your Book (the Quran) which you have revealed and in Your Prophet ﷺ (Muhammad) whom you have sent). Then if you die on that very night, you will die with faith (i.e. or the religion of Islam). Let the aforesaid words be your last utterance (before sleep).” I repeated it before the Prophet ﷺ and when I reached “Allahumma amantu bikitabika-l-ladhi anzalta (O Allah I believe in Your Book which you have revealed).” I said, “Wa-rasulika (and your Apostle).” The Prophet ﷺ said, “No, (but say): Wanabiyika-l-ladhi arsalta (Your Prophet ﷺ whom you have sent), instead.”

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*